جنرل سیکرٹری کا پیغام

میں خداوند ذوالجلال کی بارگاہ میں بڑے عجزکے ساتھ سجدہ شکر بجالاتا ہوں کہ اس نے مجھے الحاج مولوی ریاض الدین کے بیٹا ہونے کی نسبت سے نوازا۔وہ بڑے دل والے فیاض اور گہری بصیرے کے حامل شخص تھے۔ انہوں نے مستقبل میں خواتین کی تعلیم کی اہمیت کو بہت پہلے محسوس کر لیا تھا۔پھر وہ اس مقدس نصب العین کو لے کر اٹھے کہ وہ تعلیم کے ذریعے خواتین کو طاقتور بنائیں۔ اپنے ذاتی ارادے اور پرخلوص عزم کی بنیاد پر انہوں نے بچیوں کی تعلیم کیلیے انہوں نے تعلیمی ادارے بانا شروع کیے۔

جناح یونیورسٹی برائے خواتین کا قیام دراصل ایک بہت بڑی کامیابی تھی۔ تعلیم و تدریس کا عمل ایک ننھے پودے کی نشوونما کرنے جیسا ہے، بالکل ایسے ہی جیسے ایک مالی بہتر پھل کے لیے اپنے پودوں کی زیادہدیکھ بھال کر تا ہے ایک مدرس و معلم بھی اپنے طلبہ پر بھرپور توجہ دتا ہے۔ مختلف مضامین سے متعلق علوم کے ساتھ ساتھ طالبات کی اخلاقیات اور بہتر سلوک کے لیے ان کی تربیت بھی ضروری ہے بلکہ میرے نزدیک تو یہ کتاب پڑھنے سے بھی کہیں زیادہ اہم ہے۔

جناح یونیورسٹی برائے خواتین کا مشن خواتین کو معیاری تعلیم کے ذریعے طاقتور بنانا ہے تاکہ وہ اپنے اہل خانہ، اپنے ملک اور عالم انسانیت کی بلاامتیاز خدمت کر سکیں۔ جیسا کہ آپ جانتے ہیں جناح یونیورسٹی برائے خواتین شہر کے قلب میں واقع ہے اور کراچی میٹروپولٹین کے ہر کونے کو قابل برداشت تعلیم کی فراہمی کی شمع کے ذریعے منور کر رہی ہے۔

میں فیکلٹی کے ارکان کا بھی شکرگزار ہوں جو کہ اس یونیورسٹی میں معیاری تعلیم کے لیے برابر کی مساعی کر رہے ہیں۔ میں اس دعا کے ساتھ یونیورسٹی میں داخل ہونے والی طالبات کو خوش آمدید کہتا ہوں کہ خد انہیں ان کے کیر یئر میں زیادہ کامیاب اور فعال بنائے۔ آمین

فصیح الدین احمد
جنرل سیکرٹری
انجمن اسلامیہ ٹرسٹ