بی بی اے (بزنس ایڈمنسٹریشن)

:دورانیہ
۴ سال

شعبہ بزنس ایڈمنسٹریشن

شعبہ بزنس ایڈمنسٹرینش کی تعریف یوں کی جاتی ہے کہ یہ ایک ایسا عمل ہے جس میں مقاصد کے حصول کیلیے کاروباری افراد اور ذرائع کی تنظیم کی جاتی ہے۔بزنس ایڈمنسٹریشن میں بیچلر ڈگری سے اکاؤنٹن، فنانس، معاشیات، کاروباری قوانین، اخلاقیات، مارکیٹنگ، تنظیمی رویہ، اسٹریٹجک مینجمنٹ اور مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم سے متعلق حقیقی علم حاصل ہوتا ہے۔بزنس پروگرام کے عمومی مطالعے کا مطلب یہ ہے کہ اس شعبے سے فارغ التحصیل طالبعلم کو وسیع فہم حاصل ہوا اور وہ بہتر ابلاغی مہارت کے ساتھ بہتر فیصلہ ساز کے طور پر سامنے آئے۔بزنس مینجمنٹ کے وظفیاتی امور کے لیے عالمگیر بصیرت اور پبلک پرائیویٹ سیکٹر کے سیاق وسباق میں کاروباری منصوبوں کا انتظام وہ مہارتیں ہیں جو اس پروگرام کے توسط سے طالبات حاصل کر تی ہیں۔ہمارے ہاں بزنس مینجمنٹ میں شروع سے ہی توجہ ان کاروباری مہارتوں پر دی جاتی ہے جن سے کوئی بھی شخص موثر کاروباری رہنما بن سکے۔اس میں کمپنی کے اندر تبدیلیاں لانے کی صلاحیت،اہم فریقین میں اتفاق رائے پیدا کرنا اور کاروباری کامیابی کیلیے تخلیقی حکمت عملی بنانا شامل ہے۔ مینجمنٹ کی ذیل میں عملے کی بھرتی، ہدایات دینا اور کسی تنظیم کی پلاننگ کرنا جیسے بنیادی امور بھی شامل ہیں۔

بزنس ایڈمنسٹریشن ان جناح یونیورسٹی فاویمن

بزنس ایڈمنسٹرینس میں ڈگری کی سطلب دیگر تمام تر ڈگریوں کی نسبت زیادہ ہے۔ مارکیٹنگ، سیلز، ٹیکنالوجی، تعلیم اور بالائی سطح کی مینجمنٹ پوزیشنز سبھی کچھ کے لیے قیادت، ابلاغ اور کمپیوٹر ٹیکنالوجی درکار ہوتی ہے اور یہ سب کچھ ہمارے ہاں بزنس ایڈمنسٹریشن کی تعلیم میں شامل ہے

جناح یونیورسٹی فارویمن کا بزنس ایڈمنسٹریشن کا شعبہ اپنے فریقین (اساتذہ، طالبات) کے مابین مکالمے کامعیار بہتر بناکر ان کے مفاد کو پورا کرنے کا مشن سرانجام دیتا ہے۔یہ شعبہ مقامی اور بین الاقوامی سطح پر اپنے گریجوایٹس کے ذریعے معاشرے میں اضافی قدر پیداکرتا ہے۔

جناح یونیورسٹی برائے خواتین کے بزنس ایڈمنسٹریشن کا شعبہ اس امر کو یقینی بنائے گاکہ کاوباری مکاتب فکر، کارپوریٹ کمیونٹیز،شفافیت اور دیانتداری یقینی بنانے کے مجاز حکام سے اس کے تعلقات باہمی ثمر آور تعاون اور مسابقت کی فضا میں ہوں۔

جناح یونیورسٹی برائے خواتین ایک ذمہ دارکارپوریٹ شہر ی کے طور پر بزنس ایڈمنسٹریشن کا شعبہ پاکستان خواتین اور پورے پاکستان کیلیے پائیدا ر مستقبل تخلیق کرنے میں اپنا کردار ادا کر رہا ہے۔

کیرئیر

بزنس ایڈمنسٹریشن کے گریجوایٹس کیلیے بہت بڑے پیمانے پر چوائسز موجود ہیں اور تعلیم حاصل کرنے کے بعد انہیں بہت بڑی تعداد میں مختلف اداروں میں سے کسی ایک کے انتخاب کا موقع ملتا ہے۔یہ ادارے کاروباری اور تجارتی نوعیت کے بھی ہوسکتا ہے اور مالیاتی سیکٹر؛ بینکوں، انشورنس ایجنسیوں، میوچل فنڈز،بروکریج ہاؤسز، پریمیم فنڈزوغیرہ بھی اسی میں شامل ہیں۔

پبلک سیکٹر، حکومتی اور مقامی حکام، چھوٹے میڈیم سائز کاروباراور این جی اوز جیسی دیگر تنظیمیں، ایڈورٹائزنگ ایجنسیاں، ایم این سی ایز، ٹیلی ویژن چینلز، پرنٹ میڈیا آرگنائزیشنزوغیرہ اس میں شامل ہیں۔یہاں یہ بھی یاد رہے کہ یہ ان ادروں میں سے صرف چند ایک ہیں جو بزنس گریجوایٹس کو اپنے اداروں میں بھرتی کرتے ہیں اور اسکی وجہ یہ ہے کہ بزنس گریجوایٹس کسی بھی نوعیت کے کاروبار کے تقریباً ہر اہم پہلو کا علم رکھتے ہیں، خواہ وہ سیلز ہو، فنانس، مارکیٹنگ یا پھرایچ آریا اخلاقیات۔طالبات کے پاس اپنا کاروبار کھڑا کرنے کے مواقع بھی ہوتے ہیں کیونکہ انہیں پڑھایا جاتا ہے کہ چھوٹے کاروبار وں کا انتظام کیسے کیاجائے اور وہ کون سے نکات ہیں جن کاکوئی بھی کاروبارشروع کرتے ہوئے ابتدا سے ہی خیال رکھنا چاہئے۔

تازہ ترین خبریں