بی ایس (سیاسیات)

:دورانیہ
۴ سال

سیاسیات

علوم میں ہمیشہ پیشرفت ہوتی رہتی ہے جس کے نیتجے میں وہ تبدیل ہوتے رہتے ہیں اس کی وجہ یہ ہے کہ نئے حقائق دریافت ہوتے ہیں، نئے مفروضے اور نظریات قائم ہوتے ہیں اور ان کی بنیاد پر نئے تصورات جڑ پکڑتے ہیں۔ یہی چیز سیاسیات کے علم پر بھی صادق آتی ہے۔ سیاسیات عالمی اہمیت کا ایک وسیع موضوع ہے۔جناح یونیورسٹی برائے خواتین میں سیاسیات کا شعبہ اسی وسیع اور مختلف الانواع علوم کا ایک مختصر اور جامع سروے ہے۔سیاسیتات پاکستان کی یونیسورسٹیز اور کالجز میں ایک مقبول موضوع بن رہا ہے۔ سیاسیات کے موضوع پر بہت سی شاندار تدریسی کتب موجود ہیں جو بہت معتبر اور امتیازی پس منظر کے حامل مصنفین اور اسکالرز نے لکھی ہیں۔

سیاسیات جنا ح یونیورسٹی برائے خواتین میں

سیاسیات کا شعبہ جناح یونیورسٹی برائے خواتین کے سب سے پرانے شعبہ جات میں سے ایک ہے۔ اس وقت سے لے کر اب تک اس شعچے نے نہ صرف بی اے، بی اے(آنرز)، ایم اور بی ایس پولٹیکل سائنس کے شعبوں میں ڈگریاں دی ہیں۔یہ ڈپارٹمنٹ انورسلانہ اڈیٹوریم کے قریب اے بلاک میں ہے۔ یہ شعبہ نظریاتی اور آپریشن پہلو سے سیاست کے عمل کی تعلیم دیتا ہے۔

سیاسی سائنس کا شعبہ یونیورسٹی کی مجموعی پیشرفت میں اہم کر دا ادا کر رہا ہے۔ یہ شعبہ بین الاقوامی امور کے شعبے کا مادر شعبہ ہینکہ اس شعبے کی بنیاد ہی پولٹیکل سائنس کے شعبے کے اندر رکھی گئی۔ مزید برآں مطالعہ پاکستان کا شعبہ بھی پولٹیکل سائنس کے شعبے کا حصہ ہے اور وہ یونیورسٹی کے تمام شعبوں اور فیکلٹیز کے لیے خدمات انجام دے رہا ہے۔ چونکہ اس شعبے کی ابتدا سے ہی اسے اہل علم اسکالرز اور اساتذہ کا تعاون دستیاب رہا جن میں پروفیسر بدالاں بدر، پروفیسر ڈاکٹر حامد می، پروفیسر ڈاکٹر سید عادل حسین، پروفیسر مہر النسا علی اور ڈاکٹر ایم عبداللہ قادری شامل ہیں جنہوں نے بڑی نمایاں حیثیت میں خدماتانجام دیں۔

تدریس

فیکلٹی میں انگریزی اور اردو دونوں میڈیمز میں باقاعدہ لیکچرز دیئے جاتے ہیں اور طلابات ان سیمیناروں اور ورکشاپس و گروپ ڈسکشنز میں حصہ لیتی ہیں۔ جزوقتی اساتذہ کے لیکچرز بھی طالبات لازمی طور پر اٹینڈ کر تی ہیں

کیریئر

بی ایس، ایم او ایم ایس کے کورسز سیاسیات اور بین الاقوامی شعبہ جات کے نصاب کو اس طرح ڈیزائن کیا گیا ہے کہ طالبات ان علوم کے بڑے نظریات، نوعیت اور حرکیات کو سمجھ سکیں اور سیاسی نظام اور فارن پالیسی کے محرکات کی تجزیاتی مہارت کوبہتر بنا سکیں۔اس وعبے کامقصد ایسے اذہان تشکیل دینا ہے جو طالبات کو زندگی کی پیچیدگیوں کو موثر طورپر سمجھنے کا اہل بنا سکے۔قطع نظر اس کے کہ کون سے پیشے اور شعبہ ہائے روزگار وہ اپناتے ہیں۔ کورسز طلبہ کی مدد کرتے ہیں کہ وہ وفاقی وصوبائی حکومتوں کی سول سروسز اور پرائیویٹ سیکٹر کے مسابقتی امتحانات کی تیار ی کر سکیں اور ان کے ذریعے بیوروکریسی اور نجی شعبے میں انتظامی امور سنبھال سکیں۔

تازہ ترین خبریں